اس تحریر پر 2 تبصرے کئے گئے ہیں


  1. کیسی اچهی بات بتائی……واقعی ایسا لگاکہ آپ کی جرمن استانی زیرِ لب مسکرا کر ہماری طرف اشارہ کرنا چاہتی ہے کہ یہ دولخت ہونے والے ملک سے ہیں – زمینی حقائق اور اعداد و شمار کی بات ایک طرف، آج بهی ہمارے اور بنگالیوں میں کوئی بہت اچهے تعلقات نہیں ……اور جو بچا کچها وطن ہمارے ہاتھ میں ہے، اس میں بهی جی بهر کے تعصب ہے-
    اللہ سے رحم اور کرم کی دعا ہے.

    Reply

  2. بہت اچھی اور نئی معلومات ہیں ہم اپنی تاریخ سے ہٹ کر کسی اور ملک کے بارے میں بہت کم معلوم کرتے ہیں ۔
    بہت اچھا لکھا اور پڑھکر اچھا بھی بہت لگا ۔۔خوش رہیں

    Reply

sarwataj کو جواب دیں جواب ترک کریں

بے فکر رہیں، ای میل ظاہر نہیں کیا جائے گا۔ * نشان زدہ جگہیں پُر کرنا لازمی ہے۔ آپکا میری رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں، لیکن رائے کے اظہار کیلئے شائستہ زبان، اعلیٰ کردار اور باوضو ہونا ضروری ہے!۔ p: